Tag - بحر مضارع،

رموز شاعری میری غزلیں اورعروض

بے دام ہم بکے سرِ بازارعشق میں – غزل فاروق درویش ۔ بحر، اوزان اوراشاراتِ تقطیع

    بے دام ہم بکے سر ِ بازار عشق میں رسوا ہوئے جنوں کے خریدار عشق میں    زنجیریں بن گئیں میری آزادیاں حضور زندان ِ شب ہے کوچہ ء دلدارعشق میں     درپیش پھر سے...