سرنامۂ وحشت ہوں مہجورِ رفاقت نئیں : سخنور۔ میم ۔ میم ۔ مغل

Share this

سرنامۂ وحشت ہوں مہجورِ رفاقت نئیں
میں عشق کا بندہ ہوں مزدورِ محبت نئیں

سن صوم و صلوٰةِ عشق کب مجھ سے قضا ہے تو
تجھ نین وضو سے ہوں مفرورِ عبادت نئیں

دل سینے میں چیخ اُٹھّا اے دستِ غزال آثار
میں زخم نہیں دل ہوں مقدورِ مسیحت نئیں

محتاج کہاں ہوں اب دُکھ درد کے درماں کا
تجھ ہونے سے ہنستا ہوں مسرورِ اذیت نئیں

جو تیری طبیعت ہے وہ میری طبیعت ہے
اس لوحِ تدارک میں منشورِ وضاحت نئیں

بہتی ہوئی آنکھوں میں ہے جلوہ گہہِ جاناں
صد شوق چلے آؤ یہ طُورِ خجالت نئیں

رَم بھرتے ہوئے آہو دَم بھرتی ہوئی آہیں
اے دشتِ تعلق میں رنجورِ مسافت نئیں

منصور اناالحق است ، محمود انالعشقم
جب چاہے غزل کہہ لوں مجبورِ طبیعت نئیں

( میم۔میم۔مغل)

اپنی رائے سے نوازیں

FAROOQ RASHID BUTT

عالمی امن اور اتحاد اسلامی کا پیامبر ، نام فاروق رشید بٹ اور تخلص درویش ہے، سابقہ بینکر ، بلاگر ، شاعر اور ورڈ پریس ایکسپرٹ ہوں ۔ آج کل ہوٹل مینجمنٹ کے پیشہ سے منسلک ہوں ۔۔۔۔۔

Related Articles

Leave a Reply

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker