میری غزلیں اور عروض

ہم عشق زدہ سوختہ جاں ہجر گزیدہ۔ بحر و اوزان غزل ، اصول تقطیع

ہم عشق زدہ، سوختہ جاں، ہجر گزیدہ وہ کعبہ ء جاں حسن کہ دیدہ نہ شنیدہ زلفوں کے حجاب اٹھے…

Read More »

کلامِ اقبال کی زمین میں میری حسبِ حال غزل بحر و اوزان اور اصولِ تقطیع

اقبال کی زمین میں میری غزل احباب کی نذر اس شہر ِ صدآشوب میں اتری ہے قضا دیکھ فرعون بنے…

Read More »

دریوزہ گری حرفہء درویش وقلندر۔ غزل فاروق درویش ۔۔۔۔ ڈاکٹر عبدالقدیر کے نام

در یوزہ گری حرفہء درویش و قلندر کشکولیء شب پیشہ ء دارا و سکندر   غدار ِ حرم فتنہ ء…

Read More »

لیلیٰ ترے صحراؤں میں محشر ہیں ابھی تک ۔ غزل فاروق درویش

 لیلیٰ ترے صحراؤں میں محشر ہیں ابھی تک                         …

Read More »

اندھی آنکھوں والا راجہ گدھ مورے گھر آوے گا

اندھی آنکھوں والا راجہ گدھ مورے گھر آوے گا زندہ لاشے بھوکے بچے دیکھ نہیں کچھ پاوے گا رنگ برنگے…

Read More »

غزل فیض احمد فیض، غزل فاروق درویش ۔ بحر، اوزان اور اصولِ تقطیع

    گلوں سے خون بہے باد ِ اشک بار چلے اٹھیں جنازے سیاست کا کاروبار چلے     فریبِ…

Read More »

دل قلندرہے جگر عشق میں تندورمیاں. از فاروق درویش ۔ بحر، اوزان اوراشاراتِ تقطیع

دل قلندر ہے جگر عشق میں تندور میاں شوق ِ دیدار روانہ ہے سوئے طور میاں گل بدن شعلہ ء…

Read More »

یہ بتانِ شب کی حکومتیں یہ ریاستوں کی قیادتیں ۔ فاروق درویش

  یہ بتانِ شب کی حکومتیں ، یہ ریاستوں کی قیادتیں صفِ دشمناں کی رفاقتیں ہیں کہ دیر و دہر…

Read More »

بے دام ہم بکے سرِ بازارعشق میں – غزل فاروق درویش ۔ بحر، اوزان اوراشاراتِ تقطیع

    بے دام ہم بکے سر ِ بازار عشق میں رسوا ہوئے جنوں کے خریدار عشق میں    زنجیریں…

Read More »

عشق جب بن کے خدا دل کے قریں رہتا ہے ۔ فاروق درویش

عشق جب بن کے خدا دل کے قریں رہتا ہے پھر زمانے کے کہاں زیر ِ نگیں رہتا ہے آج…

Read More »
Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker